رَب

0
255

یہ جو رَب ہے وہی سب ہے
گِرے گا توں تھامے گا وہ
لڑکھڑائے گا سانبھے گا وہ
              کیونکہ یہ جو رَب ہے وہی سب ہے

جب گردشِ دوراں تجھے ستائے گی
تند و تیز ہوا تجھے ڈگمگائےگی
وہ وسیلہ تبھی بنائے گا
تجھے اِس طوفان سے بچائے گا
              کیونکہ یہ جو رَب ہے وہی سب ہے

آنسو جب تھمنے نہ پائیں گے
دُکھ کے بادل گہرے چھا جائیں گے
وہ اپنا جلوہ ایسا دکھائے گا
خوشی کا موسم نِکھر کے آئے گا
             کیونکہ یہ جو رَب ہے وہی سب ہے

تنہائی سے توں جب لڑ رہا ہوگا
دُشمن سے اپنے بِپَھر رہا ہوگا
وہ تیرا ساتھ یوں نبھائے گا
تجھے تیری جیت سے ملائے گا
            کیونکہ یہ جو رَب ہے وہی سب ہے

توں جب سوچے گا کچھ نہیں باقی
لوگ تو بہت ہیں کوئی نہیں ساتھی
وہ تیری بِگڑی ایسی بنائے گا
اِک سکوں تیری ہستی میں لے آئے گا
            کیونکہ یہ جو رَب ہے وہی سب ہے

نینٗ بس یقینِ کامل کر لے
یہ احساس خود میں شامل کر لے
جب بھی خودی کو مٹا کے جُھک جائے گا
وہ تیری روح میں تہہ تک سما جائے گا
            کیونکہ یہ جو رَب ہے وہی سب ہے

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here